صاف پانی کی فراہمی کامسئلہ

مانسہرہ نیوز    ۔                ایبٹ آباد شہر میں پینے کے صاف پانی کی فراہمی کامسئلہ سنگین صورتحال اختیار کر گیا، کئی کئی محلوں میں ہفتہ ہفتہ پانی فراہم نہیں کیا جا رہا ، ایبٹ آباد شہر جو تین یونین کونسلوں ملک پورہ ، اربن سٹی سنٹرل اور کہیال پر مشتمل ہے ایبٹ آباد کے سنجیدہ سماجی و سیاسی حلقوں نے شدید

سرد موسم میں پانی کی مسلسل نایابی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ سرد موسم میں پانی کی قلت کا اگر یہ عالم ہے تو پھر موسم گرما میں جب پانی کی ضرورت میں مزید اضافہ ہو گا کیا ہو گا، ان حلقوں نے کہا کہ انتظامیہ کی نا اہلی سے اربوں روپے کی لاگت سے ایبٹ آباد شہر کیلئے گریوٹی فلو سکیم مکمل ہوئے سال سے زیادہ عرصہ ہو گیاہ ے ، لیکن اس کے باوجود ایبٹ آباد کے شہری پانی کی

بوند بوند کوترس رہے ہیں شہر میں پانی کی پائپ لائن ڈالنے کا تھیکہ جس ٹھیکیدار کو دیا گیا جس رفتار سے پائپ بچھانے کاکام شروع ہے اس سے ایسا نظر آتا ہے کہ آئندہ سال بھر میں یہ کام مکمل ہوتا نظر نہیں آتا، شہر کے مختلف گنجان محلے جس میں مدنی محلہ ، لوئر ملکپورہ اور قاضی محلہ شامل ہے ابھی تک وہاں کام شروع نہیں کیا گیا، ان حلقوں نے کہاکہ اب ضرورت اس امر کی ہے کہ ایبٹ آباد

شہر کے لئے ایک خود مختیار واٹر بورڈ تشکیل دیا جائے بلدیہ ایبٹ آباد کی بس کی بات نہیں ایبٹ آباد شہر میں سٹریٹ لائٹس اور صفائی کا نظام بھی بلدیہ ایبٹ آباد درست نہیں کر سکی، اس لئے صوبائی حکومت کو چاہیے کہ صوبے کے دوسرے بڑے شہر میں واٹر بورڈ کاقیام عمل میں لا کر شہریوں کو پانی کی قلت سے نجات دلائی جائے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*