مریضوں کو طبی سہولیات دینے میں مکمل طور پر ناکام

مانسہرہ نیوز    ۔     ایوب ٹیچنگ ہسپتال ایبٹ آباد کاڈائیلسز یونٹ مریضوں کو طبی سہولیات دینے میں مکمل طور پر ناکام ہو گیا ہے اور ہسپتال انتظامیہ مذکورہ یونٹ کو فعال بنانے میں نہ صرف ناکام ہیں بلکہ یہ یونٹ مریضوں کیلئے درد سر بن گیا ہے یونٹ میں نصب مشینیں اکثر و بیشر خراب رہتی ہیں اور یہ اپنی مدت پوری

کر چکی ہیں اور ان کو ٹھیک کرنے والا کنٹریکٹر بھی غائب ہو گیا ہے جس کی وجہ سے ڈائیسلز کے مریضوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے حسن ابدال سے گلگت اور آزاد کشمیر تک کے مریضوں کیلئے یہ واحد ڈائلسیز سنٹر ہے جہاں پر مریضوں کا علاج کیا جاتا ہے تاہم مذکورہ ڈائلیسز سنٹر مریضوں کو طبی سہولیات دینے

میں مکمل طور پر ناکام ہے جس کی تمام تر ذمہ داری ہسپتال انتطامیہ کے سر عائد ہوتی ہے صوبائی حکومت جو کہ صحت کی مفت طبی سہولیات کے گزشتہ دو سال سے نعرے لگا رہی ہے یہ صرف کھوکھلے نعرے ہی ثابت ہوئے ہیں ہزارہ کے اس بڑے ہسپتال سمیت دیگر چھوٹے ہسپتالوں اور صوبے کے دیگر اضلاع

میں قائم طبی مراکز میں طبی سہولیات کا فقدان ہے اور مریض در بدر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں کلینکل لیبارٹیوں میں سہولیات ناپید ہیں اسی طرح ایمرجنسی ، آئی سی یو، سی سی یو، لیبر روم اور وارڈ میں ادویات مکمل طور پر ناپید ہیں جبکہ سینئر ڈاکٹرز کی بھی ان ہسپتالوں میں کمی ہے جس کی وجہ سے مریض در بدر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*