کارکنوں کی مرضی سے قیادت کا انتخاب

مانسہرہ نیوز     ۔          بلدیاتی نظام اور تحریک انصاف کو ’ہائی جیک‘ ہونے نہیں دیا جائے گا: ڈاکٹر اظہر جدون جماعتی انتخابات کا آزادانہ‘ شفاف اور منصافانہ انداز میں انعقاد کرایا جائے گا: کارکنوں کی مرضی سے قیادت کا انتخاب ہوگا رکن سازی مہم میں نوجوان اور بالخصوص خواتین کو بڑھ چڑھ کر حصہ لینا چاہئے‘ تحریک انصاف ہی درخشاں پاکستان کا مستقبل ہے خیبرپختونخوا میں سیاسی

‘ نسلی و لسانی تعصبات سے بالاتر‘ اہلیت کی بنیاد پر ملازمتیں اور بدعنوانی کا خاتمہ عملاً ممکن بنا دیا گیا ہے رکن قومی اسمبلی کی نواں شہر ایبٹ آباد میں منعقدہ ’پبلک ڈے‘ کے موقع پر مختلف علاقوں سے آئے عوامی نمائندہ وفود سے ملاقاتیں پاکستان تحریک انصاف کے رہنما‘ رکن قومی اسمبلی (این اے سترہ) ڈاکٹر محمد اظہر خان جدون نے ہزارہ ڈویژن اور بالخصوص ضلع ایبٹ آباد میں تحریک انصاف کی

بڑھتی ہوئی مقبولیت کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ ماضی کے مقابلے تحریک انصاف کی رکن سازی مہم کو زیادہ پذیرائی مل رہی ہے تاہم نوجوانوں اور بالخصوص خواتین کو چاہئے کہ وہ رکن سازی مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں اور تبدیلی کے اُس منظرنامے کو عملی جامہ پہنانے کی کوششوں کا حصہ بنیں جو تحریک انصاف چیئرمین عمران خان کی قیادت میں جاری ہیں۔ اتوار (اٹھائیس فروری) نواں شہر ایبٹ آباد میں ’پبلک ڈے‘ کے موقع پر مختلف علاقوں سے آئے عوامی نمائندہ وفود سے

بات چیت کرتے ہوئے ڈاکٹر اظہر جدون نے کارکنوں کے تحفظات کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ’’بلدیاتی نظام یا تحریک انصاف کی جماعتی تنظیم سازی کو کسی بھی صورت ہائی جیک ہونے نہیں دیا جائے گا۔ انہوں نے شفاف‘ آزاد اور منصفانہ بنیادوں پر جماعتی انتخابات کے لئے کئے جانے والے اقدامات کا ذکر کرتے ہوئے یہ بات زور دے کر کہی کہ جماعتی انتخابات میں کارکنوں کی مرضی سے قیادت کا انتخاب

ہوگا اور کسی بھی صورت جعل سازی نہیں ہونے دی جائے گی۔ ڈاکٹر اظہر جدون نے ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ’’تحریک انصاف نے روائتی سیاست کو شکست دی ہے اور نسلی لسانی یا سیاسی بنیادوں پر تعصبات پر یقین نہیں

رکھتی۔ انہوں نے کہا کہ ’’خیبرپختونخوا میں بدعنوانی سے پاک طرزحکمرانی جیسے بظاہر ناممکن کام کو سرانجام دینے والی تحریک انصاف نے تعمیر و ترقی کے عمل کو زیادہ پائیدار بنایا ہے اور یہی وجہ ہے کہ بلدیاتی نمائندوں کو زیادہ مالی و انتظامی اختیارات دیئے گئے ہیں‘ جس کی ماضی میں مثال نہیں ملتی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*