21

فریدون تنولی پر قاتلانہ حملہ و درج بوگس ایف آئی آر کیس اصل محرکات سامنے آگئے

مانسہرہ ۔ سماجی شخصیت فریدون تنولی پر قاتلانہ حملہ و درج بوگس ایف آئی آر کیس اصل محرکات سامنے آگئے۔غلط فہمی پر اختر شاہ نے بروئے جرگہ معافی مانگ لی۔

سادات کاغان نادر شاہ، منظور شاہ ودیگر نے تین روز کے اندر ریوو گاڑی برآمدگی فریدون تنولی کے حوالے کرنے کا اعلان کر دیا ۔ایس ایچ او سٹی صداقت نثار ودیگر نامعلوم ساتھیوں کیخلاف مل کر محکمانہ وقانونی کارروائی کا فیصلہ۔

تفصیلات کے مطابق مشیر وزیراعلی کے پی کے سید احمد حسین شاہ کے غازی کوٹ ٹائون شپ میں واقع حجرہ پر جرگہ منعقد ہوا۔جسمیں سیاسی و سماجی شخصیت سید نادر شاہ آف کاغان ، سید منظور شاہ، امجد شاہ ، سید طاہر شاہ آف کاغان سمیت سادات جرگہ نمائندگان اور اختر شاہ جبکہ دوسری جانب سے مدعی ممتاز سماجی وسیاسی شخصیت فریدون تنولی ، سابق امیدوار صوبائی اسمبلی نوجوان سیاسی وسماجی شخصیت سفیر ابرار تنولی، زاہد تنولی، محمد شہزاد ،سہیل تنولی،محمد بلال ودیگر جرگہ نمائندگان تناول نے شرکت کی۔

اس موقع پر اختر شاہ آف کاغان نے بروئے جرگہ اپنی کوتاہی وغفلت کو تسلیم کرتے ہوئے معذرت کی۔جس پر سماجی وسیاسی شخصیت فریدون تنولی نے سفیر ابرار تنولی ودیگر شرکاء جرگہ کے سامنے اختر شاہ کو معاف کر دیا ۔جس پر ھرگہ شرکاء سید نادر شاہ ، سید منظور شاہ ودیگر نے دونوں کو آپس میں غلط فہمیاں دور ہونے پر آپس میں گلے ملوا دیا ۔

جبکہ اس موقع پر سادات آف کاغان سید نادر شاہ، سید منظور شاہ ، سید امجد شاہ،سید طاہر شاہ نے بروئے جرگہ مدعی ومتاثرہ فریدون تنولی کی ریووگاڑی تین دن کے اندر برآمد کرکے فریدون تنولی کے حوالے کرنے کا اعلان
کیا ۔
اس موقع پر اختر شاہ نے کہا کہ ایس ایچ او سٹی صداقت نثار نے مجھ سے ریوو گاڑی کے بارے میں غلط فہمیاں پیدا کرکے دو لاکھ 30 ہزار نقد رشوت لی ہے۔جبکہ فریدون تنولی پر فائرنگ سمیت بوگس مقدمہ اندراج میں بھی ایس ایچ او صداقت نثار اور اسکے دیگر ساتھیوں کیخلاف محکمانہ وقانونی انکوائری اور کاروائی کیلئے مل کر قانونی کاروائی کا اعلان کیا گیا ۔

آخر میں دونوں فریقین کو گلے ملوایا گیا اور غلط فہمیاں دور کرکے اتحاد واتفاق کیلئے اجتماعی دعا کی گئ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں