13

رجیم چینج کے بعد

تجربہ کار ٹیم نے 8 ماہ میں غریب عوام کی چمڑی ادھیڑ کر رکھ دی ہے۔ آٹا 5300 روپے من پہلے 2400 کا من تھا اب 2600 کا 20 کلو تھیلا ہے۔

مرغ 150 سے 330 روپے کلو پیاز 80 روپے سے 220 روپے کلو.
مہنگی 100% بڑھ چکی ہے غریب تو غریب امیر بھی چلا اٹھے ہیں۔
کویی سیاسی، سماجی، صحافی، نیوز چینل، اینکر، سول سوسائٹی یا جماعت جو کھل کر موجودہ نا اہل اور کرپٹ حکمرانوں جنکا تعلق مسلم لیگ ن، پاکستان پیوپلز پارٹی، جمیعت علماء اسلام (فضل)، کے خلاف بات کرنے کو تیار نہیں۔ چور اور ڈاکو کھل کر ڈنکے کی چوٹ پر ملکی سرمایہ پر ہاتھ صاف کر رہے ہیں اور ملک میں مہنگاہی کو آسمان پر لے گئے ہیں کویئی بات ہی نہیں کرتا۔ معیشت کا ستیا ناس کر دیا ہے۔

سب خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں۔ پاکستان اور پاکستانی قوم کو تباہی کے دھانے لے گئے ہیں۔
پٹواری، نیوز چینل کے مالکان اور حکومت کے چمچے کڑچھے صبح ہوتے ہی جھوٹ بولنا شروع کرتے ہیں اور لوگوں کو گمراہ کرتے رہتے ہیں تاکہ لوگ حکومت کی طرف متوجہ نہ ہوں۔

یہ ایک سیدھی سادی اور planned سکیم ہے۔ ملک کے خلاف ہے۔ یہ لوگ پاکستان اور لوگوں کے دشمن ہیں یہ پاکستان کو کمزور کر کے پاکستان کو خدا نا خواستہ صفحہ ہستی سے مٹا دینا انکا ایجنڈا ہے۔ حالات یوں ہی لگتے ہیں لیکن لوگ مصلحت کا شکار اور خاموش کیوں ہیں۔ اور چوروں، ڈاکوؤں اور غدار حکمرانوں کو کھلی چٹھی ملی ہوئی ہے۔

ابھی آئی ایم ایف نے قسط دینے سے پہلے مزید بجلی، گیس اور پیٹرول مہنگا کرنے کی پھکی دی ہے اور لٹیروں نے حامی بھر دی ہے۔ پاکستان کے غیرت مند اس دشمن حکومتی حکمرانوں کے خلاف اٹھ کھڑی ہو۔ یہی وقت ہے لٹیروں سے ملک بچانے کا۔ ورنہ ہم خدا نا خواستہ ہسٹری نہ بن جائیں کہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں