6

جیلوں میں موجود قیدیوں میں ایڈز اور ہیپاٹائٹس کا انکشاف

مانسہرہ (مانیٹرنگ ڈیسک) خیبرپختونخوا کی جیلوں میں قیدیوں میں ایڈز اور ہیپاٹائٹس کا انکشاف ہوا ہے۔

میڈیا کو موصول دستاویز کے مطابق جیلوں میں 196 قیدی متعدی بیماریوں میں مبتلا ہیں جن میں سے 138 قیدی ہیپاٹائٹس سی کا شکار ہیں، 29 قیدی ہیپاٹائٹس بی، 25 ایڈز اور 4 قیدی ٹی بی میں مبتلا ہیں۔

دستاویز میں بتایا گیا ہےکہ سب سے زیادہ 47 بیمار قیدی پشاور سینٹرل جیل میں ہیں۔

دستاویز کے مطابق خیبرپختونخوا کی جیلوں میں 13 ہزار 76 قیدیوں کی گنجائش ہے اور ابھی ان کی تعداد 14 ہزار 321 ہے، جیلوں میں موجود قیدیوں میں صرف 2 ہزار 897 سزا یافتہ ہیں جب کہ 11 ہزار 424 قیدی فیصلوں کے منتظر ہیں۔

سپرنٹنڈنٹ سینٹرل جیل پشاور مقصود خان نے مانسہرہ ڈاٹ کام سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سینٹرل جیل پشاور کےاسپتال میں 124 مریضوں کی گنجائش ہے، بیمار قیدیوں کے علاج کے لیے 2 خواتین ڈاکٹرز سمیت8 ڈاکٹرز موجود ہیں، مختلف امراض میں مبتلا قیدیوں کو دوائیں بھی دی جارہی ہیں، جب بھی ضرورت ہو اسپیشلسٹ ڈاکٹرز بھی جیل آتے ہیں۔

سپرنٹنڈنٹ جیل نے بتایا کہ قیدیوں کے نفسیاتی امراض کےعلاج کے لیے جیل میں سائیکاٹرسٹ بھی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں