6

مہنگائی کے طوفان کی زد میں غریب عوام کی زندگی اجیرن

ایبٹ آباد ۔ ملک مہنگائی کے طوفان کی زد میں غریب عوام کی زندگی اجیرن دوکاندارو کے من چائے دام کوئی پوچھنے والا نہیں۔آئےروزاشیاءخوردونوش کی قیمتوں میں اضافے سے روٹی غریب کی پہنچ سے دور ہونے لگی۔آٹے کی قیمت آؤٹ آف کنٹرول ہوگئیں – گھی 600 روپے کلو ، پیاز 220 روپے کلو، مرغی 650 روپے کلو،20 کلو آٹے کا تھیلا 2800 سے 3000 ہزار تک فروخت ہونے لگا۔جبکہ سرکاری آٹا کا کوٹہ ادھر کبھی نہیں لایا گیا ۔

وفاقی وزیر مرتضیٰ جاوید عباسی ایم پی اے نذیر عباسی سے اپیل ہے یہاں بھی سرکاری آٹا بھیجا جائے ۔ بدترین مہنگائی نے دیہاڑی دار طبقے کیساتھ ساتھ سفید پوش طبقے کے بھی چیخیں نکال دیں۔

غریب جائے تو جائے کدھر۔تفصیلات کے مطابق ملک بھر میں مہنگائی کا طوفان جس تیزی کیساتھ چل رہا ہے اس سے ملک بھر کی طرح سرکل بکوٹ میں بسنےوالے بےروزگار اورغریب اس کمر توڑ ناقابل برداشت مہنگائی سے پریشان ہیں لیکن سیاستدان ٹولہ الیکشن کے ایام میں عوام کو بے وقوف بنا کے صرف ووٹ لینے کی غرض سے اپنا چہرہ انوردیکھاتےہیں ۔

الیکشن کے بعد عوام کی خدمت کی بجائے کرسی کیلئے کوشاں ہوتے ہیں آئندہ ہونے والے الیکشن سے پہلے حلقہ این اے 15 اور پی پی 36 کی عوام اپنے موجودہ عوامی نمائندوں کا احتساب کرے گی حالیہ بدترین مہنگائی میں غریب عوام دو وقت کی روٹی کیلئے ترس رہے ہیں حکمران کرسی کیلئے لڑ رہے ہیں ۔

ایک طرف بےروزگاری تو دوسرے جانب خوفناک مہنگائی نے عوامی جینا مشکل کردیاہے ۔ہر روز آٹا۔گھی ۔دالوں سمیت اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں ہو شربا اضافہ کیا جارہا ہے جس سے غریب عوام خودکشیوں پر مجبور ہوچکے ہیں۔

عوام نے وفاقی و صوبائی حکومتوں سے مطالبہ کیا ہے کہ تھورا عوام پر رحم کرکے آٹے سمیت اشیاء خوردونوش کی قیمتوں کو کم کریں تاکہ غریب عوام کو ریلیف مل سکے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں