6

گڑہی حبیب اللہ تا بوئی روڈ کی تعمیر میں مبینہ کرپشن اور تاخیر

مانسہرہ ۔ گڑہی حبیب اللہ تا بوئی روڈ کی تعمیر میں مبینہ کرپشن اور تاخیرپر ڈی سی مانسہرہ نے محکمہ سی اینڈ ڈبلیو سے 3 دن کے اندر رپورٹ طلب کر لی جبکہ آئندہ ہفتے زیر تعمیر روڈ کی موقع پر جاکر معائنہ کرنے کی یقین دہانی کرا دی ۔

تفصیلات کے مطابق گڑہی تا بوئی روڈ 36 کروڑ کے منصوبے کی تعمیر میں مبینہ کرپشن اور محکمہ و ٹھیکیدار کی ملی بھگت کے خلاف ایکشن کمیٹی کے ایک وفد نے ڈپٹی کمشنر مانسہرہ کیپٹن ر بلال سے ملاقات کی وفد میں ایکشن کمیٹی کے ممبران چیئرمین ویلج کونسل دبن 2 بابو دلدار عباسی ، سابق ممبر ضلع کونسل سردار محمد سعید، سابق ممبر تحصیل کونسل

مولانا عبداللہ عباسی، ایڈیٹر روزنامہ شمال نصیرانور ، ممبر ویلج کو نسل دلولہ توصیف غنی عباسی اور سابق ممبر ملک شرافت عباسی شامل تھے جہنوں نے ڈی سی مانسہرہ کو روڈ کی تعمیر میں محکمہ اور ٹھیکیدار کی ملی بھگت سے کرپشن اور تاخیری حربوں کے حوالے سے تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ 36 کروڑ کے منصوبے پر 2سال قبل کام شروع کیا گیا ۔

لیکن ابھی تک موقع پر 20 فی صد کام بھی مکمل نہیں ہوا اور ٹھیکیدار نے محکمہ سے 10 کروڑ سے زائد کی رقم وصول کر لی ہے اور موقع پر کام بھی بند کر رکھا ہے روڈ کی تعمیر میں مسلسل تاخیر کی وجہ سے لاکھوں کی آبادی پر مشتمل 4 یونین کونسلوں کے عوام کو شدید مشکلات کا سامنا کرناپڑ رہا ہے ۔

ٹھیکیدار نے روڈ اکھاڑ کر چھوڑ دیا ہے جس کی وجہ سے سڑک کنارے آبادی دھول سے بیماریوں کا شکار ہو رہی ہے ، وفد نے ڈی سی کو بتایا کہ محکمہ روڈ کی تعمیر اور کے حوالے سے تفصیلات فراہم کرنے سے بھی گریزاں ہے لہذا ہمیں رائٹ ٹو انفارمیشن ایکٹ کے تحت اس کی جملہ تفصیلات اور بی او کیو بھی فراہم کیا جائے ۔

وفد نے ڈی سی مانسہرہ کو تحریری طور پر درخواست بھی دی جس پر ڈی سی مانسہرہ نے موقع پر ہدایات جاری کیں کہ محکمہ سی اینڈ ڈبلیو سے 3 دن میں رپورٹ طلب کی جائے جبکہ ڈی سی مانسہرہ نے وفد کو یقین دلایا کہ آئندہ ہفتے میں خود وزٹ کر کے عوام کی مشکلات کے ازالہ کے لیے اقدامات کروں گا جس پر وفد نے ڈی سی مانسہرہ کا شکریہ ادا کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں