13

لطیف آفریدی قتل۔مانسہرہ میں بھی وكلا کا ہڑتال اور تین روزہ سوگ کا اعلان

مانسہرہ ۔ لطیف آفریدی قتل کیخلاف دیگر اضلاع کی طرح مانسہرہ میں بھی وكلا کا ہڑتال اور تین روزہ سوگ کا اعلان
ممتاز قانون دان لطیف آفریدی پر فائرنگ کا واقعہ پشاور ہائیکورٹ کے بار میں پیش آیا جہاں بار کے احاطے میں ان پر فائرنگ کی گئی جس میں سینئر وکیل لطیف آفریدی شدید زخمی ہوئے جنہیں تشویشناک حالت میں اسپتال منتقل کیا گیا تھا جہاں وہ جانبر نہ ہوسکے۔
لیڈی ریڈنگ اسپتال انتظامیہ نے لطیف آفریدی کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کردی ہے۔
پولیس کے مطابق عبدالطیف آفریدی کو 6 گولیاں لگیں اور ان پر فائرنگ کرنے والے شخص کو موقع پر ہی گرفتار کرلیا گیا ہے۔
واضح ر ہےکہ معروف قانون دان لطیف آفریدی سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے صدر بھی رہ چکے تھے۔
لطیف آفریدی قتل کیس گرفتار ملزم عدنان ولد سمیع اللہ (سینئر وکیل) اور انسداد دہشت گردی کے مقتول جج آفتاب آفریدی کا بھانجا ہے۔ ذرائع
سپریم کورٹ بار کے سابق صدر لطیف آفریدی ایڈوکیٹ کو خاندانی دشمنی میں انکے دور کے ایک رشتہ دار نے قتل کیا ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں